سعودی عرب میں تاش کے کھیل ’’رمی‘‘ کے سب سے بڑے ٹورنامنٹ کا انعقاد

ریاض (سپورٹس لنک رپورٹ) مقبول سعودی کارڈ گیم بالوٹ کا دارالحکومت ریاض میں پہلا ٹورنامنٹ چار اپریل سے جاری ہے۔ پہلا نیشنل بالوٹ چیمپیئن شپ کنگ عبداللہ پٹرولیم سٹڈیز اینڈ ریسرچ سنٹر ریاض میں جاری ہے، یہ ٹورنامنٹ 18 اپریل تک جاری رہے گا۔ سعودی جنرل سپورٹس اتھارٹی کا کہنا ہے کہ چار بہترین کھلاڑیوں میں 270,000 ڈالر تقسیم کیے جائیں گے اور فاتح کو 133,350 ڈالر دیے جائیں گے۔سعودی ذرائع ابلاغ کی رپورٹس کے مطابق اس ٹورنامنٹ میں 12000 افراد شرکت کر رہے ہیں، سعودی عرب کی کئی ممتاز شخصیات نے ٹورنامنٹ کے مقام پر دورہ کیا ہے۔ العربیہ کاالعربیہ کا کہنا ہے کہ کارڈ گیم، فرنچ گیم بیلوٹ اور رمی کی طرح مقبول ہے اور یہ پاکستان اور انڈیا میں بھی کھیلے جاتے ہیں، سعودی عرب میں بھی یہ تمام عمر کے لوگوں میں اسی طرح مقبول ہے، سعودی عرب کے نوجوان اسے کھلی جگہوں پر بیٹھ کر کھیلتے ہیں،عرب یہ کھیل ہمسائیوں کے ساتھ، دوستانہ ملاقاتوں، خاندانی اجتماعات اور شادی بیاہ پر بھی کھیلتے ہیں۔ سعودی معاشرے میں اس کھیل کو اچھا نہیں سمجھا جاتا اور کہا جاتا ہے کہ جو اسے کھیلتا ہے وہ اللہ کی نعمت سے محروم ہو گیا۔ یہ ایک قدیم کھیل ہے جو نسل در نسل سے چل رہا ہے اور آہستہ آہستہ بالوٹکھیل عرب دنیا کی ثقافت بنتا جا رہا ہے اور ہو سکتا ہے کہ آنے والے دنوں میں یہ بین الاقوامی سطح پر کھیلا جانے لگے۔ مقبول سعودی کارڈ گیم بالوٹ کا دارالحکومت ریاض میں پہلا ٹورنامنٹ چار اپریل سے جاری ہے۔ پہلا نیشنل بالوٹ چیمپیئن شپ کنگ عبداللہ پٹرولیم سٹڈیز اینڈ ریسرچ سنٹر ریاض میں جاری ہے، یہ ٹورنامنٹ 18 اپریل تک جاری رہے گا۔ سعودی جنرل سپورٹس اتھارٹی کا کہنا ہے کہ چار بہترین کھلاڑیوں میں 270, 000 ڈالر تقسیم کیے جائیں گے اور فاتح کو 133, 350 ڈالر دیے جائیں گے۔ سعودی ذرائع ابلاغ کی رپورٹس کے مطابق اس ٹورنامنٹ میں 12000 افراد شرکت کر رہے ہیں، سعودی عرب کی کئی ممتاز شخصیات نے ٹورنامنٹ کے مقام پر دورہ کیا ہے۔

15Shares

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

error: Content is protected !!