ویرات کوہلی نے فاسٹ بائولر محمد عامر کے بارے میں کیا بیان داغ دیا؟

مانچسٹر(سپورٹس لنک رپورٹ)ھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی کا کہنا ہے کہ ورلڈکپ میں پاکستان اور بھارت کے میچ میں ان کا اور محمد عامر کا کوئی مقابلہ نہیں کیوں کہ کسی ایک بولر سے مقابلہ کبھی ان کے ذہن میں نہیں ہوتا۔مانچسٹر میں پریکٹس سیشن کے بعد میڈیا سے گفتگو میں ویرات کوہلی کا کہنا تھا کہ ان کے سامنے بولر کوئی بھی ہو، ان کا فوکس صرف گیند پر ہوتا ہے، کسی ایک بولر کے ساتھ مقابلہ کبھی ذہن میں نہیں رکھا کیوں کہ سامنے عامر ہو یا کوئی پارٹ ٹائم بولر، اگر خراب شاٹ کھیلا تو وکٹ جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ عامر ہو یا ربادا، اچھے بولر کی صلاحیت کا احترام کرنا ضروری ہے۔پاک بھارت میچ کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ پاکستان کی ٹیم میں بہت باصلاحیت کھلاڑی ہیں لیکن وہ مخالف ٹیم کے بارے میں زیادہ نہیں سوچتے، ان کی کوشش ہوتی ہے کہ اپنی اسٹرینتھ کو دیکھ کر پلان کریں اور گراؤنڈ میں بہتر کرکٹ کا مظاہرہ کریں۔بھارتی کپتان نے امید ظاہر کی کہ اتوار کو پاکستان اور بھارت کے درمیان پورے 50 اوورز کی کرکٹ ہو لیکن اگر ایسا نہیں ہوا تو پھر ان کو اپنا کامبی نیشن تبدیل کرنا ہوگا۔پاک بھارت مقابلوں کی گرمی پر ویرات کوہلی نے کہا کہ بطور پروفیشنل کرکٹر ان کیلئے یہ بس ایک میچ ہے، کھلاڑیوں کیلئے ضروری ہے کہ وہ بھی اس میچ کو پروفیشنل میچ کی طرح لیں، باہر کا ماحول انجوائے کرنا فینز کا کام ہے۔ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ شیکھر دھون کا نہ ہونا ایک دھچکا ضرور ہے لیکن ان کی جگہ آنے والے کھلاڑی بھی اچھے ہیں اس لئے زیادہ پریشانی نہیں ہے۔ویرات کوہلی نے شعیب ملک کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی آل راؤنڈر نے اپنے ملک کیلئے بہت کچھ حاصل کیا، یہ ورلڈ کپ ان کا آخری ہے اس کے بعد کی زندگی کیلئے ان کیلئے نیک خواہشات ہیں۔بھارتی کپتان سے پاک بھارت میچ کے سب سے مزاحیہ لمحے کے حوالے سے پوچھا گیا جس پر ان کا کہنا تھا کہ موہالی میں سیمی فائنل کے دوران شاہد آفریدی اور وہاب ریاض کے درمیان ہونیوالی گفتگو سن لی تھی جس پر اپنی ہنسی نہیں روک پایا تھا۔یاد رہے کہ ورلڈکپ میں پاکستان اور بھارت کے درمیان میچ اتوار کو اولڈ ٹریفورڈ گراؤنڈ میں ہوگا۔

0Shares

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

error: Content is protected !!